HADITH-10 FAMOUS SAYINGS OF THE PROPHET MOHAMMED (Peace be upon him) THAT WILL TAKE YOU TO JANNAT

الطریق الی

الجنتہ

الْاَ حَادِیْثُ الْعَشَرَۃُ فِیْ الْاَذْکَارِ لْمُشْتَھَرَۃ

عا ئض القرنی

THE WAY TOWARDS JANNAT

TEN FAMOUS TEN HADITH

This contains ten famous Hadith which will take you to heaven (Jannat) with the permission of ALLAH.

بسم اﷲالرحمن الرحیم

عَشْرُ اَحَادِیْثَ تُوْصِلْکُمْ بِاِذْنِ اﷲِ الْفِرْدَوُسَ الْاَ عَلیٰ

اَلْحَمْدُ لِلّہِ وَ الصَلَاۃُ وَ السَّلَامُ عَلیٰ رَسُوْلِ اﷲ وَ علیٰ آلِہِ وَ صَحْبِہِ وَمَنْ وَّالَا ہُ

دس احادیث جو اللہ کے اذن سے آپ کو جنت کے اعلیٰ درجے فردوس تک لے جا سکتی ہیں۔

تمام تعریفیں اللہ سبحانہ و تعالیٰ کے لیے ہیں اور درودوسلام ہو اللہ کے رسول ﷺ پر اور آپؐ کی آل پر اور آپؐ کے اصحاب پر اور اس پرجو آپؐ ہی سے دوستی رکھے۔ وبعد

یہ کتابچہ الْاَ حَادِیْثُ الْعَشَرَۃُ فِیْ الْاَ ذْکَارِ الْمُشْتَھَرَۃِ)مشہوراذکار کی دس احادیث(پر مشتمل ہے جس میں میں نے اذکارپر

مشتمل ایسی ممتاز احادیث کو منتخب کیا ہے جو اجر کے اعتبار سے بہت ہی عظیم ، فضیلت کے اعتبار سے بہت ہی افضل اور سند کے اعتبار سے صحیح ترین ہیں۔ تاکہ ان کا حصول ہر مسلمان مردوعورت پر آسان ہو، کنبے کے افراد سفر و حضر میں ان اذکار کو بار بار پڑھیں، درس گاہوں میں ان کا اعادہ ہو اور علم و خیر اور اصلاح کی ہر محفل میں انہیں دہرایا جائے۔

لہذاآپ سب ان اذکار و احادیث کو یاد کرلیں اور اس پر عمل بھی کریں۔ اُس ذات کی قسم!جس کے ہاتھ میں میری جان ہے یہ اذکارخزانوں سے بھی زیادہ مہنگے، جمع شدہ دولت سے بھی زیادہ قیمتی، نشان زدہ گھوڑوں سے بھی زیادہ نفیس اور سرخ اونٹوں سے بھی زیادہ بہتر ہیں بلکہ اجر عظیم ، ثواب کثیر اور زبردست انعام کے لیے کرم والے بادشاہ رحمن و رحیم کی طرف سے یہ آسمان و زمین کی کنجیاں ہیں ۔ جس نے اپنے بندوں سے ہمیشہ قائم رہنے والی نعمتوں کا وعدہ کر رکھا ہے۔ میں اپنے لیے اور ہر اس شخص کے لیے جو انہیں پڑھتا، پڑھاتا، پھیلاتا اور عمل کرتا ہے دعا گو ہوں کہ اﷲتعالیٰ سے اپنی رضاکی کامیابی سے نوازے ، جنت کا گھر عطا کرے اور اسے نار جہنم سے بچائے۔ آمین۔

1۔ عَنْ اَبِیْ ھُرَیْرَۃَ قَالَ: قَالَ رَسُوْلُ اﷲِ ﷺ: اَلَا اَدُلُّکُمْ بِمَا اِنْ اَخَذْتُمْ بِہِ اَدْرَکْتُمْ مَنْ سَبَقَکُمْ وَلَمْ یُدْرِکْکُمْ اَحَدُ بَعْدَ کُمْ ، وَکُنْتُمْ خَیْرَ مَنْ اَنْتُمْ بَیْنَ ظَھْرَ انَیْھِمْ، اِلَّامَنْ عَمِلَ مِثْلَہُ تُسَبِّحُوْنَ دُبُرَ کُلَّ صَلَاۃٍ ثَلَاثًاوَثَلَاثِیْنَ وَ تَحْمَدُ وْنَ ثَلَاثًاوَثَلَاثِیْنَ وَ تُکَبِّرُوْنَ ثَلَاثًاوَثَلَاثِیْنَ وَ تَقُوْلُ تَمَامَ الْمِا ءَۃِ: لَا اِلٰہَ اﷲُ وَحْدََہُ لَا شَرِیْکَ لَہُ، لَہُ الْمُلْکُ وَ لَہُ الْحَمْدُ وَھُوَ عَلٰی کُلِّ شَیْ ءٍ قَدِیْرٌ. )متفق علیہ(

سیدنا ابو ہریرہؓ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا: ” کیا میں تمہیں ایسی بات نہ بتاؤں کہ جس پر عمل کر کے تم ان لوگوں کے مرتبہ کو پہنچ جاؤ گے جو تم پر سبقت لے گئے ہیں اور تمہارے بعد آنے والا تمہیں نہیں پا سکے گا۔ اور تم جن لوگوں میں ہو ان سے بہتر ہوجاؤگے سوائے اس شخص کے جو اس جیسا عمل کرے، تم ہر نماز کے بعد ۳۳ بار سبحان اللہ، ۳۳ بار الحمدللہ، ۳۳ بار اللہ اکبر کہو اور یہ کہہ کر سو پوارا کرلو کہ:لَا اِلٰہَ اﷲُ وَحْدََہُ لَا شَرِےْکَ لَہُ، لَہُ الْمُلْکُ وَ لَہُ الْحَمْدُ وَھُوَ عَلٰی کُلِّ شَیْ ءٍ قَدِیْرٌ. ” اللہ کے سواکوئی معبود نہیں ، وہ اکیلا ہے اس کا کوئی شریک نہیں، بادشاہت اسی کی ہے اور ہر قسم کی تعریف بھی اسی کے لیے ہے اور وہ ہر چیز پر قدرت رکھنے والا ہے۔

Sayyiduna Abu Huraira radiallahuan has narrated that the Prophet peace be upon him stated, ‘Shall I not tell you a thing upon which if you act you can catch up with those who have surpassed you and nobody would overtake you and you would be better than the people amongst whom you live except those who would do the same act. After every prayer say:”Glory be to Allah” 33 times;”All praise be to Allah” 33 times; “Allah is the Greatest” 33 times; and complete the hundredth with: “there is no true deity except Allah; the One and Only; there is no partner associated with Him; to Him belongs all Sovereignty and to Him belongs all Praise, and He over all things is always All-Powerful.” [Agreed Upon]

.2 وَعَنْہُ اَنَّ رَسُوْلَ اﷲِ ﷺ قَالَ: مَنْ قَاللَااِلٰہَ اِلَّا اﷲُ وَحْدََہُ لَا شَرِ یْکَ لَہُ، لَہُ الْمُلْکُ وَ لَہُ الْحَمْدُ وَھُوَ عَلیٰ کُلِّ شَیْ ءٍ قَدِیْرفَیْ کُلِّ یَوْمٍ مِاءۃَ مَرَۃٍ کَانَتْ لَہُ عَدْلَ عَشْرِ رِقَابٍ، وَ کُتِبَتْ لَہُ مِاءَۃُ حَسَنَۃٍ، وَمُحِیَتْ عَنْہُ مِاءَۃُ سَیِّءَۃٍ، وَ کَانَتْ لَہُ حِرْزًامِّنَ الشَّیْطَانِ یَوْمَہُ ذٰلِکَ حَتّٰی یُمْسِیَ وَ لَمْ یَاْتِ اَحَدٌ بِاَفْضَلَ مِمَّا جَاءَ بِہِ اِلَّا اَحَدٌعَمِلَ اَکْثَرَ مِنْ ذٰلِکَ. )متفق علیہ(

اور انہی سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا: جو شخص ہر روز یہ دعا سو مرتبہ پڑھے گا::لَا اِلٰہَ اﷲُ وَحْدََہُ لَا شَرِےْکَ لَہُ، لَہُ الْمُلْکُ وَ لَہُ الْحَمْدُ وَھُوَ عَلٰی کُلِّ شَیْ ءٍ قَدِیْرٌ.’’ اللہ کے سوا کوئی معبود نہیں ، وہ اکیلا ہے اس کا کوئی شریک نہیں، بادشاہت اسی کی ہے اور ہر قسم کی تعریف بھی اسی کے لیے ہے اور وہ ہر چیز پر قدرت رکھنے والا ہے‘‘، تو اس کو دس(10) غلام آزاد کرنے کا ثواب ہو گا۔ اس کے لیے سو نیکیاں لکھی جائیں گی اور اس کی سو برائیاں مٹا دی جائیں گی اور اس دن شام تک وہ شیطان کے شر سے محفوظ رہے گا، نیز کوئی شخص اس سے افضل عمل لے کر نہیں آئے گا سوائے اس شخص کے جو اس سے زیادہ مرتبہ عمل کرے‘‘۔

And it is narrated by the same companion that Allah’s Messenger peace be upon him said, ‘If one recites this dua one-hundred times everyday: “There is no true deity except Allah; the One and Only; there is no partner associated with Him; to Him belongs all Sovereignty and to Him belongs all Praise, and He over all things is Always All-Powerful”,then he will get the reward of freeing ten slaves, and one-hundred good deeds will be written in his account, and one-hundred bad deeds will be erased from his account and on that day he will be protected from the morning till evening from Satan, and no person will be superior deed then him except the one who has done the deeds more superior than that which he has done.’ [Agreed Upon]

  1. وَعَنْہُ اَنَّ رَسُوْلَ اﷲِ ﷺقَالَ: مَنْ قَالَ سُبْحَانَ اﷲِ وَ بِحَمْدِہِ، فِیْ یَوْمٍ مِاءَۃَ مَرَّۃٍ، حُطَّتْ خَطَایَاہُ، وَاِنْ کَانَتْ مِثْلَ زَبَدِ الْبَحْرِ۔)متفق علیہ(

اور انہی سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا: ’’ جس نے ایک دن میں سو مرتبہ کہا سُبْحَانَ اﷲِ وَ بِحَمْدِہِ ’’اللہ پاک ہے اور اسی کی تعریف ہے‘‘۔ اس کے تمام گناہ مٹا دیے جاتے ہیں خواہ و ہ سمند رکی جھاگ کی مانند ہوں‘‘۔

The Same companion has narrated that Allah’s Messenger peace be upon him said, ‘Whoever says: “Glory be to Allah, and praise be to him” – one hundred times a day, all his sins will be forgiven even if they were as much as the foam of the sea.’ [Agreed Upon]

4 . وَعَنْہُ عَنِ النَّبِیِ ﷺ قَالَ: کَلِمَتَانِ خَفِیْفَتَانِ عَلَی الّلِسَانِ، ثَقِیْلَتَانِ فِی الْمِیْزَانِ،حَبِیْبَتَانِ اِلَی الرَّحْمٰنِ:سُبْحَانَ اﷲِ وَ بِحَمْدِہِ سُبْحَانَ اﷲِالْعَظِیْمِ۔)متفق علیہ(

اور انہی سے روایت ہے کہ نبی ﷺ نے فرمایا: ’’ دو کلمے ایسے ہیں جو زبان پر بہت ہلکے پھلکے، میزان میں بہت بھاری اور رحمن کو بڑے ہی پیارے ہیں:سُبْحَانَ اﷲِ وَ بِحَمْدِہِ سُبْحَانَ اﷲِالْعَظِیْم’’اللہ پاک ہے اور اسی کی تعریف ہے، اللہ پاک ہے بہت عظمت والا‘‘۔

 

And it is narrated by the same companion that the Prophet peace be upon him said, ‘There are two expressions which are very easy for the toungue to say, but they are very heavy in the balance and are very dear to the Beneficent (Allah), and they are: ” Glory to Allah, and praise be to Him and Glory be to Allah, the Most Great. ” [Agreed Upon]

5 . وَعَنْہُ قَالَ: قَالَ رَسُوْلُ اﷲِ ﷺَ:لَاَنْ اَقُوْلَسُبْحَانَ اﷲِ وَ الْحَمْدُ لِلّٰہِ وَلَا اِلٰہَ اِلَّا اﷲُ وَاﷲُ اَکْبَرُاَحَبُّ اِلَیَّ مِمَّا طَلَعَتْ عَلَیْہِ الشَّمْسُ۔)رواہ مسلم(

اور انہی سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺنے فرمایا: ’’ مجھے :سُبْحَانَ اﷲِ وَ الْحَمْدُ لِلَّہِ وَلَا اِلٰہَ اِلَّا اﷲُ وَاﷲُ اَکْبَرُ’’پاک ہے اللہ اور تمام تعریف اللہ ہی کے لیے ہے اور اللہ کے سوا کوئی معبودنہیں اور اللہ سب سے بڑا ہے‘‘۔کہنا ہراس چیزسے محبوب ہے جس پر سورج طلوع ہوتاہے۔

And it is narrated by the same companion that the Allah’s Messenger peace be upon him said, “Uttering of (these words): “Glory be to Allah; and praise be to Him, there is no true diety except Allah and Allah is the Greatest”. is dearer to me than that thing over which the sun rises.’ [Sahih Muslim]

6 . وَعَنْہُ قَالَ: قَالَ رَسُوْلُ اﷲِ ﷺَ:مَنْ صَلّٰی عَلَیَّ صَلَاۃً صَلَّی اﷲُ عَلَیْہِ بِھاَ عَشْرًا۔)رواہ مسلم(

اور انہی سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺنے فرمایا: ’’جو مجھ پر ایک بار درود بھیجے اللہ اس پر دس رحمتیں بھیجتا ہے‘‘ ۔

And it is narrated by the same companion that the Messenger of Allah peace be upon him said: ‘He who invokes Allah to send blessings on me once, Allah would bless him ten times..’ [Sahih Muslim]

7 .عَنْ اَنَسٍ قَالَ: کَانَ اَکْثَرُدُعَاءِالنَّبِیِّ ﷺ: اَللّٰھُمَّ آتِنَا فِی الدَّنْیَا حَسَنَۃً، وَ فِی الْآخِرَۃِ حَسَنَۃً، وَقِنَا عَذَابَ النَّارِ۔)متفق علیہ(

سیدنا انسؓ سے روایت ہے فرمایا: نبی ﷺکی اکثر دعا یہ ہوا کرتی تھی: اَللّٰھُمَّ آتِنَا فِی الدَّنْےَا حَسَنَۃً، وَ فِی الْآخِرَۃِ حَسَنَۃً، وَقِنَا عَذَابَ النَّار’’اے اللہ ہمیں دنیا میں بھلائی عطا فرما اور آخرت میں بھی بھلائی دے اور ہمیں دوزخ کے عذاب سے محفوظ رکھ‘‘ ۔

Sayyiduna Anas radiallahuan has narrated that the most frequent invocation of the Prophet peace be upon him was: “O Allah! Give to us in the world that which is good and in the Hereafter that which is good, and save us from the torment of the Fire.” [Agreed Upon]

8 .عَنْ اَبِیْ مُوْسَی الْاَ شْعَرِیِّ قَالَ:قَالَ لِیْ رَسُوْلُ اﷲِ ﷺ: یَا عَبْدَ اﷲِ بْنَ قَیْسٍ: اَلَا اَدُلُّکَ عَلٰی کَنْزٍ مِنْ کُنُوْزِ الْجَنَۃِ؟!قُلْتُ: بَلٰی یَا رَسُوْلَ اﷲِ قَالَ:لَا حَوْلَ وَ لَا قُوَّۃَ اِلَّا بِاﷲِ۔)متفق علیہ(

سیدنا ابو موسیٰ اشعریؓ سے روایت ہے کہتے ہیں کہ رسول اللہ ﷺ نے مجھ سے فرمایا: ’’ اے عبداللہ بن قیس! کیا میں تمہیں جنت کے

خزانوں میں سے ایک خزانے کے بارے میں نہ بتاؤں؟!میں نے کہا: ضرور بتائیے اے اللہ کے رسول، آپ ﷺ نے فرمایا: )وہ کلمہ یہ ہے(لَا حَوْلَ وَ لَا قُوَّۃَ اِلَّا بِاﷲِ ’’ اللہ کے سوا کسی کے پاس زور اور طاقت نہیں ہے‘‘۔

Sayyiduna Abu Musa Al-Ash’ari radiallahuan has narrated that the the Prophet peace be upon him said to me: “Shall I tell you a sentence which is one of the treasures of Paradise?’ I Said, ‘Yes, O Allah’s Messanger peace be upon him !’ He said, ‘It is: “There is no might nor power except with Allah.” [Agreed Upon]

 

.9عَنْ شَدَّادِ بْنِ اَوْسٍ قَالَ رَسُوْلُ اﷲِ ﷺ: سَیِّدُ الْاِ سْتِغْفَارِ اَنْ تَقُوْلَ:اَللّٰھُمَّ اَنْتَ رَبِّیْ، لَا اِلٰہَ اِلَّا اَنْتَ، خَلَقْتَنِیْ وَاَنَا عَبْدُکَ وَاَنَا عَلٰی عَھْدِکَ وَوَ عْدِکَ مَا اسْتَطَعْتُ، اَعُوْذُبِکَ مِنْ شَرِ مَا صَنَعْتُ، اَبُوْءُ لَکَ بِنِعْمَتِکَ عَلَیَّ وَاَبُوْءُ بِذَنْبِیْ فَا غْفِرْلِیْ اِنَّہُ لَا یَغْفِرُ الذُّنُوْبَ اِلَّا اَنْتَ۔ )رواہ البخاری(

سیدنا شدّادبن اوسؓ سے روایت ہے رسول اللہ ﷺ نے فرمایا کہ سید الاستغفار یہ ہے کہ تم کہو: ’’ اے اللہ! تو ہی میرا رب ہے، تیرے سوا کوئی معبو د نہیں، تو نے مجھے پیدا کیا اور میں تیرا بندہ ہوں او ر میں اپنے استطاعت کے مطابق تجھ سے کیے ہوئے عہد اور وعدے پر قائم ہوں، میں تیری پناہ چاہتا ہوں ہر برائی سے جو میں نے کی، میں اپنے اوپر تیری عطا کردہ نعمتوں کا اعتراف کرتا ہوں اور اپنے گناہ کا اعتراف کرتا ہوں، پس مجھے بخش دے، یقیناًتیرے سوا کوئی گناہوں کو بخش نہیں سکتا‘‘۔

Sayyiduna Shaddad bin Aus radiallahuan has narrated that the Prophet peace be upon him said, ‘The most superior way of asking for forgiveness from Allah is: “O Allah, You are my Lord, there is no true deity except You. You created me and I am your servant, I am upon your convenant and Your promise to the best of my ability. I seek refuge with you from every evil that I have done. I acknowledge Your bounties upon me and I confess my sins, so forgive me, verily none forgives sins except You.”” [Sahih al-Bukhari]

.10عَنْ جُوَیْرِیَۃَ بِنْتَ الْحَارِثِ قَالَتْ:قَالَ رَسُوْلُ اﷲِ ﷺَ :لَقَدْ قُلْتُ بَعْدَکِ اَرْبَعَ کَلِمَاتٍ ثَلَاثَ مَرَّاتٍ لَوْ وُزِ نَتْ بِمَا قُلْتِ مُنْدُ الْیَوْمِ لَوَزَنَتْھُنَّ: سُبْحَانَ اﷲِ وَبِحَمْدَہِ عَدَدَ خَلْقِہِ وَ رِضَا نَفْسِہِ وَزِنَۃَ عرْشِہِ وَمِدَادَ کَلِمَاتِہِ۔ )رواہ مسلم(

سیدناجویریہ بنت حارثؓ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا: ’’میں نے تمہارے بعد چار کلمے تین بار کہے ہیں ۔ اگر وہ ان کلمات کے سا تھ تولے جائیں جو آج تم نے اب تک کہے ہیں تو وہ بھاری ہوں گے سُبْحَانَ اﷲِ وَبِحَمْدِہِ عَدَدَ خَلْقِہِ وَرِضَانَفْسِہِ وَزِنَۃَ عَرْشِہِ وَمِدَادَ کَلِمَاتِہِ۔ ’’پاک ہے اللہ اور اسی کی تعریف ہے اس کی مخلوق کی تعداد کے برابر، اس کی ذات کی رضا کے برابر ، اس کے عرش کے وزن اور اس کے کلمات کی سیاہی کے برابر‘‘۔

Jawairiyyah radiallahuanha has narrated that Allah’s Messenger peace be upon him said, ‘I recited four words three times after you, if these are to be weighed against what you have recited today till now then these would outweigh them and (these words) are: “Glory be to Allah, and praise be to Him to the extent of the number of His creation and to the extent of His pleasure and to the extent of the weight of His Throne and to the extent of the ink of His words. “” [Sahih Muslim]

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.